وزیر اعظم یلدرم دورہ یونان پر

ہم کئی  ایک امور کو     مشترکہ طور پر  نبٹاتے ہوئے مزید ترقی حاصل کر سکتے ہیں۔ لہذا ہمیں  باہمی تنازعات کو باہمی مشاروت  اور  نیک نیتی     کے ذریعے حل کرنا ہو گا

وزیر اعظم یلدرم دورہ یونان پر

 

وزیر اعظم بن علی یلدرم کا کہنا ہے کہ  ترکی اور یونان   ایک ہی محل وقوع میں دوہمسایہ ملکوں کے طور پر  ایک جیسی تقدیر  کے مالک ہیں۔

یونانی وزیر اعظم الیکسسز   چپراس  کی دعوت پر  یونان تشریف لے جانے والے  وزیر اعظم یلدرم نے  اولین طور پر  اپنے   ہم منصب   سے ملاقات کی۔

جناب یلدرم کا استقبال پرائم منسٹر ہاؤس میں   چپراس   نے کیا جس کے بعد دونوں ملکوں کے سربراہان نے  بلمشافہ مذاکرات  سے قبل   مختصراعلانات کیے۔

وزیر  اعظم ترکی نے  اس موقع پر کہا کہ "ہم ہمسائے ہیں،  ہمارے  ہاں  ایک کہاوت   ہے کہ پڑوسی، پڑوسی کا محتاج ہے۔  یعنی   ہم ایک  ہی جغرافیہ  میں   زندگیاں گزار رہے ہیں، جس کا مطلب ہے کہ ہمارا مقدر بھی مشترکہ ہے۔ بلا شبہہ بعض اوقات  باہمی مسائل پیش آسکتے ہیں،   لیکن ان  کو عقل  سلیم سے کام لیتے ہوئے  اور  دو طرفہ مذاکرات  کے ذریعے  حل کیاجا سکتا ہے۔"

حالیہ  چند برسوں سے  یونان کے   مشکلات سے دو چار   ہونے اور ترکی کی جنوبی سرحدوں پر  واقع شام اور عراق میں   خانہ جنگی جاری ہونے کی یاددہانی کرانے والے    وزیر اعظم یلدرم کا کہنا تھا کہ   اس بنا پر  ہمیں   بھی مشکلات کا  سامنا   کرنا پڑتا  ہے،  جن کا  حل دو طرفہ  نیک نیتی اور    باہمی  تعاون میں پوشیدہ ہے۔ مل جل کر ہم  مثبت اقدامات اٹھا سکتے ہیں۔  ہم کئی  ایک امور کو     مشترکہ طور پر  نبٹاتے ہوئے مزید ترقی حاصل کر سکتے ہیں۔ لہذا ہمیں  باہمی تنازعات کو باہمی مشاروت  اور  نیک نیتی     کے ذریعے حل کرنا ہو گا۔

یونانی وزیر اعظم کا بھی کہنا تھا کہ  ترکی اور یونان کے درمیان  مسائل کو  پائدار  موقف  کی بدولت  حل کرنا  انتہائی  اہم ہے۔



متعللقہ خبریں