کھیلوں کی دنیا 41

لوئس ہملٹن کی فارمولا ون میں کامیابی

کھیلوں کی دنیا 41

فارمولا ون موٹر ریسنگ کے سلسلے میں  گزشتہ اتوار کے دن منعقد کی گئی جاپانی گراں پری دوڑ میں مرسیڈیز ٹیم کے برطانوی ڈرائیور لوئس ہیملٹن نے ایک اور کامیابی سمیٹ لی۔

 انہوں نے اس ریس میں پہلی پوزیشن حاصل کرتے ہوئے پوائنٹس ٹیبل پر اپنی پوزیشن مزید مستحکم بنا لی ہے۔

اب ان کے مجموعی پوائنٹس 306 ہو گئے ہیں اور معلوم ہوتا ہے کہ وہ رواں سال بھی عالمی چیمپئن بن جائیں گے۔ اگر یہ ہوا تو انہیں چوتھی مرتبہ یہ اعزاز حاصل ہو سکے گا۔ ابھی تک کسی برطانوی ڈرائیور نے چار مرتبہ عالمی چیمپئن بننے کا اعزاز حاصل نہیں کیا۔

سوزوکا میں منعقد ہوئی جاپانی گراں پری میں دوسری پوزیشن ریڈ بل ٹیم کے ڈرائیور ماکس فرشٹاپن کو حاصل ہوئی جبکہ اسی ٹیم کے ڈینئل ریکارڈو تیسرے نمبر پر رہے۔

اس وقت پوائنٹس ٹیبل پر دوسرے نمبر پر سباستیان ویٹل ہیں، جن کے پوائنٹس 247 ہیں۔ فیراری ٹیم کے جرمن ڈرائیور ویٹل کو جاپانی گراں پری کے دوران اس وقت پریشانی کا سامنا کرنا پڑا، جب ان کی گاڑی کا انجن فیل ہو گیا اور انہیں اس ریس سے باہر ہونا پڑ گیا۔ اس تکنیکی خرابی کے باعث ہیملٹن نے فیٹل پر 59 پوائنٹس کی واضح برتری حاصل کر لی ہے۔ تاہم ناقدین کے مطابق عالمی چیمپئن شپ کا مقابلہ ابھی ختم نہیں ہوا کیونکہ رواں سیزن کی چار دوڑیں ابھی باقی ہیں اور فیٹل ’کم بیک‘ بھی کر سکتے ہیں۔

فارمولا ون کی آئندہ ریس امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر آسٹن میں ہو گی۔ اگر امریکی گراں پری میں ہیملٹن نے کامیابی حاصل کر لی اور ویٹل چوتھی پوزیشن سے نیچے رہے، تو آئندہ عالمی چیمپئن کا اعزاز قبل از وقت ہی ہیملٹن کو مل جائے گا۔

فارمولا ون گراں پری کے اس سلسلے میں ایک ریس جیتنے والے ڈرائیور کو پچیس پوائنٹس ملتے ہیں جبکہ دوسرے نمبر پر آنے والے کو اٹھارہ اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے والے ڈرائیور کو پندرہ پوائنٹس دیے جاتے ہیں۔

عالمی نمبر ایک کھلاڑی اسپین کے رافیل ناڈال نے اپنی کرشمائی کارکردگی جاری رکھتے ہوئے آسٹریلیا کے نک کرگیوس کو شکست دے کر چائنا اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کے مردوں کا سنگلز خطاب جیت لیا۔
یہاں اتوار کی رات ٹاپ سیڈیڈ ناڈال نے ایک گھنٹے 32 منٹ تک چلے والے خطابی مقابلے میں دنیا کے 19 ویں نمبر کے کرگیوس کو 2-6، 1-6 سے شکست دے کر دوسری بار چائنا اوپن کا خطاب اپنے نام کیا۔ ہسپانوی  کھلاڑی نے اس سے قبل 2005 میں یہاں خطاب جیتا تھا۔ -16 بار کے گرینڈ سلیم چیمپئن ناڈال کے کیئریر کی یہ 75 ویں خطابی جیت ہے۔
انہوں نے سات بار کرگیوس کی سروس بریک کی۔

 ناڈال نے اس فتح کےساتھ ہی سنسناٹی اوپن کے کوارٹر فائنل میں ملی شکست کا بدلہ بھی کرگیوس سے لے لیا۔
31 سالہ ناڈال نے 2013 کے بعد سے پہلی بار ایک سیشن میں چھ خطاب جیتے ہیں۔

انہوں نے اس سیشن میں اس سے قبل فرینچ اوپن اور یو ایس اوپن کا خطاب جیتا ہے۔ اسپینی کھلاڑی کی یہ لگاتار 12 ویں جیت ہے۔



متعللقہ خبریں