جمال خاشقجی کے نفرت آمیزقتل کی وجہ سےسعودی عرب بحران سے گزر رہا ہے: سعودی وزیرتوانائی

خاشقجی کے قتل کے بعد یہ کانفرنس    بین الاقوامی سطح  پر بائیکاٹ   زیر سایہ آج صبح شروع ہوئی   جو تین روز جاری رہے گی

جمال خاشقجی کے نفرت آمیزقتل کی وجہ سےسعودی عرب بحران  سے گزر رہا ہے: سعودی وزیرتوانائی

سعودی عرب  کے  توانائی، صنعت اور معدنی وسائل کے امور کے وزیر  خالد  ال فالح  نے  جمال خاشقجی   کا قتل  نہایت ہی  نفرت آمیز فعل ہے  جس کی وجہ سے ان کے ملک  کو بحران کا سامنا ہے۔

دارالحکومت ریاض میں منعقد ہونے والی   " مستقبل کے لیے سرمایہ کاری "  کے زیر عنوان کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے   کہا کہ   صحافی خاشقجی کے قتل کی وجہ سے سعودی عرب ایک بحران سے گزر رہا ہے۔

خاشقجی کے قتل کے بعد یہ کانفرنس    بین الاقوامی سطح  پر بائیکاٹ   زیر سایہ آج صبح شروع ہوئی   جو تین روز جاری رہے گی۔

روزنامہ واشنگٹن پوسٹ   میں لکھنے والے   سعودی صحافی  جمال خاشقجی   2 اکتوبر  2018 سعودی  قونصلیٹ میں داخل ہونے کے بعد لاپتہ  ہوگیا تھا ۔

سعودی عرب  کی انتظامیہ   نے جمال خاشقجی کے دو    اکتوبر  کو استنبول کے سعودی قونصلیٹ  میں جھگڑے  کے نتیجے میں ہلاک ہونے کا   اعلان کیا تھا۔



متعللقہ خبریں